پارلیمانی کمیٹی نے سپریم کورٹ آف پاکستان میں نئے ججز کی تقرری کی منظوری دے دی۔

ججز کی تقرریوں سے متعلق پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس کے دوران ارکان نے سپریم جوڈیشل کمیشن کے تجویز کردہ ناموں کا جائزہ لیا اور ان کی توثیق کی۔ اجلاس کا اختتام کئی اہم عدالتی تقرریوں کی منظوری کے ساتھ ہوا۔

منظور شدہ تقرریوں میں لاہور ہائی کورٹ کے موجودہ چیف جسٹس ملک شہزاد احمد خان بھی شامل ہیں جنہیں سپریم کورٹ کے جج کے عہدے پر فائز کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں سندھ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس جسٹس عقیل احمد عباسی کو بھی سپریم کورٹ میں ترقی دینے کی منظوری دے دی گئی ہے۔ اسی طرح لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس شاہد بلال کو سپریم کورٹ کا نیا جج بنانے کی منظوری دے دی گئی ہے۔

یہ تقرریاں عدلیہ کے موثر کام کو یقینی بنانے، خالی آسامیوں کو پر کرنے اور اعلیٰ عدالتوں کے تجربہ کار اور معزز ججوں کے ساتھ سپریم کورٹ کو مضبوط بنانے کے لیے معمول کے عمل کا حصہ ہیں۔

پارلیمانی کمیٹی کا فیصلہ پاکستان میں عدالتی سالمیت کو برقرار رکھنے اور قانون کی حکمرانی کو برقرار رکھنے کے لیے ایک اہم قدم ہے۔ نئے تعینات ہونے والے ججوں کے پاس بہت زیادہ تجربہ اور عدالتی دانشمندی کا ٹریک ریکارڈ ہے، جس سے توقع کی جاتی ہے کہ وہ ملک کی اعلیٰ ترین عدالت میں مثبت کردار ادا کریں گے۔

جسٹس ملک شہزاد احمد خان، جو اپنی غیر جانبداری اور قانونی ذہانت کے لیے جانے جاتے ہیں، لاہور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس کی حیثیت سے اپنے دور میں کئی ہائی پروفائل کیسز کی صدارت کر چکے ہیں۔ توقع ہے کہ سپریم کورٹ میں ان کی ترقی سے عدالت کی موثر اور مؤثر طریقے سے انصاف فراہم کرنے کی صلاحیت میں مزید اضافہ ہوگا۔

اسی طرح جسٹس عقیل احمد عباسی اور جسٹس شاہد بلال، دونوں اپنی اپنی ہائی کورٹس میں انتہائی قابل احترام ہیں، سے توقع کی جاتی ہے کہ وہ اپنی مہارت اور دانشمندی کو سپریم کورٹ کے بینچ تک پہنچائیں گے، جس سے عدلیہ کی آزادی اور سالمیت کو مزید تقویت ملے گی۔

ان تقرریوں کا قانونی ماہرین اور عوام نے یکساں خیرمقدم کیا ہے، جو انہیں پاکستان میں ایک مضبوط اور آزاد عدلیہ کو یقینی بنانے کے لیے ایک مثبت قدم کے طور پر دیکھتے ہیں۔ نئے ججوں کے آنے والے ہفتوں میں عہدہ سنبھالنے کی توقع ہے، جس کے بعد وہ سپریم کورٹ میں اپنی ذمہ داریاں شروع کریں گے، انصاف کی انتظامیہ اور پاکستان کے آئین کو برقرار رکھنے میں اپنا کردار ادا کریں گے۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

شاہ محمود قریشی پر 9 مئی کو آتش زنی کیس میں فرد جرم عائد

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے سینئر رہنما شاہ محمود قریشی پر 9 مئی …