پی پی پی وفاقی بجٹ کی منظوری میں مسلم لیگ ن کی مکمل حمایت کرے گی، ڈیل کو حتمی شکل دے دی گئی

ایک اہم سیاسی پیش رفت میں، پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) نے آئندہ مالی سال کے لیے آئندہ وفاقی بجٹ کی منظوری کے لیے پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل-این) کی مکمل حمایت پر اتفاق کیا ہے۔ یہ فیصلہ دونوں جماعتوں کی قیادت کے درمیان شدید بات چیت اور مذاکرات کے بعد سامنے آیا ہے۔

مصدقہ ذرائع کے مطابق یہ معاہدہ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کے اندر اعلیٰ سطح کی قیادت میں طے پایا۔ بجٹ کے بعض پہلوؤں پر بے شمار تحفظات کے باوجود پیپلز پارٹی نے اس کی منظوری کے حق میں ووٹ دینے کا عزم کر رکھا ہے۔ اس اقدام سے پارلیمنٹ میں بجٹ کی ہموار منظوری کو یقینی بنانے کی توقع ہے۔

پی پی پی نے بجٹ کی حمایت پر اتفاق کرتے ہوئے اپنے تحفظات کا اظہار کرنے اور پارلیمنٹ میں تنقیدی تقریریں کرنے کا موقف برقرار رکھا ہے۔ ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ پارٹی پارلیمانی اجلاسوں میں اپنا احتجاج جاری رکھے گی لیکن آخر کار بجٹ کو منظور کرنے کے لیے ووٹ دے گی۔ یہ دوہرا طریقہ پی پی پی کو بجٹ کی منظوری کو یقینی بناتے ہوئے عوامی سطح پر اپنے تحفظات کو دور کرنے کی اجازت دیتا ہے۔

معاہدے کا ایک اہم پہلو پیپلز پارٹی کو دی گئی یقین دہانی ہے کہ اس کی کچھ بجٹ تجاویز کو حتمی بجٹ میں شامل کیا جائے گا۔ اس یقین دہانی نے پارٹی کی حمایت حاصل کرنے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ پی پی پی کی تجاویز کا مقصد مختلف معاشی اور سماجی مسائل کو حل کرنا ہے اور بجٹ میں ان کی شمولیت کو اشتراکی طرز حکمرانی کی جانب ایک مثبت قدم کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

اس معاہدے کے پس منظر میں پی پی پی کا بجٹ کے حوالے سے حکومت کے نقطہ نظر کے حوالے سے اہم خدشات کا پہلے اظہار شامل ہے۔ گزشتہ روز پیپلز پارٹی نے حکومت کو بجٹ کی تیاری کے دوران اعتماد میں نہ لینے پر تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔ پارٹی نے مشاورت کے فقدان پر اپنی عدم اطمینان کا اظہار کیا، جسے اشتراکی حکمرانی کے اصولوں کی خلاف ورزی کے طور پر دیکھا گیا۔

ان خدشات پر غور کے لیے بلاول بھٹو کی زیر صدارت پیپلز پارٹی کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا۔ اجلاس کے دوران پیپلز پارٹی کی بجٹ تجاویز پر حکومت کے ساتھ بات چیت کے لیے کمیٹی تشکیل دی گئی اور اسے آج کی ڈیڈ لائن دی گئی۔ اس اقدام کا مقصد اس بات کو یقینی بنانا تھا کہ پارٹی کی تجاویز پر مناسب غور کیا جائے اور انہیں بجٹ میں شامل کیا جائے۔

پی پی پی کا بجٹ کی حمایت کا فیصلہ، اپنے ابتدائی تحفظات کے باوجود، سیاسی استحکام کو برقرار رکھنے اور بجٹ کے ممکنہ بحران سے بچنے کے لیے ایک اسٹریٹجک اقدام کی عکاسی کرتا ہے۔ پی پی پی اور مسلم لیگ (ن) کے درمیان ہونے والے معاہدے سے حکومت کے کام کاج کو آسان بنانے اور اہم اقتصادی پالیسیوں کے نفاذ کو یقینی بنانے کی توقع ہے۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

اسلام آباد ہائی کورٹ نے توہین عدالت کیس میں فواد چوہدری کا جیل ٹرائل کالعدم قرار دے دیا

اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق وفاقی وزیر فواد چوہدری کے حق میں فیصلہ سناتے …