احمد آباد، بھارت کے کئی اسکولوں کو حال ہی میں بم سے اڑانے کی دھمکیاں موصول ہوئی ہیں

احمد آباد، بھارت کے کئی اسکولوں کو حال ہی میں بم سے اڑانے کی دھمکیاں موصول ہوئی ہیں۔ بھارتی میڈیا آؤٹ لیٹس کی رپورٹس کے مطابق ریاست گجرات میں واقع احمد آباد کے تین سکولوں کی انتظامیہ کو دھمکی آمیز ای میلز موصول ہوئیں جن میں سکولوں کو بم سے اڑانے کی واضح انتباہات شامل تھیں۔ اس تشویشناک صورتحال نے مقامی حکام کو فوری ایکشن لینے اور معاملے کی مکمل تحقیقات شروع کرنے پر آمادہ کیا ہے۔

احمد آباد کی مقامی پولیس نے تصدیق کی ہے کہ انہوں نے دھمکیوں کی تحقیقات شروع کر دی ہیں اور دھمکیوں کی معتبریت کا پتہ لگانے کے لیے تندہی سے کام کر رہے ہیں۔ صورتحال کی سنگینی کے باوجود پولیس نے عوام کو یقین دلایا ہے کہ گھبرانے یا الارم کی فوری ضرورت نہیں ہے۔ انہوں نے اسکول انتظامیہ، طلباء اور والدین سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنی تحقیقات کے دوران پرسکون رہیں۔

اگرچہ دھمکیوں کی اصل نوعیت اور مجرموں کی شناخت اس وقت نامعلوم ہے، حکام اس معاملے کو انتہائی سنجیدگی سے دیکھ رہے ہیں۔ انہوں نے طلباء اور عملے کے ارکان کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے متاثرہ اسکولوں میں اور اس کے آس پاس حفاظتی اقدامات میں اضافہ کر دیا ہے۔ مزید برآں، انہوں نے اسکولوں کو چوکس رہنے کا مشورہ دیا ہے اور کسی بھی مشکوک سرگرمی یا افراد کی اطلاع فوری طور پر حکام کو دیں۔

یہ واقعہ ہندوستان میں سیکورٹی کے بڑھے ہوئے خدشات کے پس منظر میں پیش آیا ہے، خاص طور پر انتخابات کے پیش نظر۔ اگلے دن انتخابات ہونے کے ساتھ، یہ قیاس آرائیاں کی جا رہی ہیں کہ دھمکیاں سیاسی طور پر محرک ہوسکتی ہیں۔ تاہم، حکام نے ایسے کسی محرک کی تصدیق نہیں کی ہے اور وہ دھمکیوں کو ایک سنگین سیکورٹی مسئلہ کے طور پر دیکھ رہے ہیں۔

یہ پہلا موقع نہیں ہے جب بھارت میں اسکولوں کے خلاف اس طرح کی دھمکیاں دی گئی ہوں۔ اس سے قبل نئی دہلی میں بھی ایسی ہی دھمکیوں کی اطلاع ملی تھی جہاں کئی اسکولوں کو بم سے اڑانے کی دھمکیاں موصول ہوئی تھیں۔ یکم مئی کو، نئی دہلی کے کل 131 اسکولوں کو بموں سے اڑانے کی دھمکی دی گئی، جو صورتحال کی سنگینی کو واضح کرتی ہے۔

طلباء اور تعلیمی اداروں کی حفاظت اور حفاظت انتہائی اہمیت کی حامل ہے اور حکام ان کے تحفظ کو یقینی بنانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑ رہے ہیں۔ احمد آباد میں مقامی پولیس خطرات سے نمٹنے اور سب کے لیے محفوظ ماحول کو برقرار رکھنے کے لیے اسکول انتظامیہ اور متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر کام کر رہی ہے۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

زلفی بخاری پی ٹی آئی چیئرمین کے مشیر برائے بین الاقوامی امور مقرر

پی ٹی آئی کے سیکریٹری جنرل عمر ایوب کی جانب سے جاری کردہ باضابطہ نوٹیفکیشن …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *