ایک بارش نے سب کو بے نقاب کر دیا: حافظ نعیم

کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے جماعت اسلامی کراچی کے رہنما حافظ نعیم رحمٰن نے حالیہ شدید بارشوں پر تشویش کا اظہار کیا جس سے پورا شہر ڈوب گیا۔ حافظ نعیم رحمان کے مطابق، کراچی میں ایک رات میں 52 ملی میٹر بارش ہوئی، جس سے بڑے پیمانے پر سیلاب آیا۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ جب کہ پنجاب اور کے پی کے جیسے دیگر خطوں میں اکثر موسلا دھار بارش ہوئی ہے، زندگی اس طرح کے خلل کے بغیر جاری ری ہے۔ تاہم، کراچی میں، ایک ہی بارش کے بعد زندگی ٹھپ ہو کر رہگئی ہے، جس سے شہر کو سنبھالنے میں پیپلز پارٹی (پی پی پی) کی نااہلی کا پتہ چلتا ہے۔

نعیمرحمان نے مقامی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ میونسپل کارپوریشن (ایم سی) اپنی ذمہ داریوں میں ناکام رہی اور بارش شروع ہونے سے پہلے ہی کونسلرز سڑکوں پر موجود تھے۔ فیصل ایونیو سمیت پوری سڑکیں پانی میں ڈوب گئیں اور لوگوں کو صبح 3 بجے تک گھروں تک پہنچنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ میئر اور سٹی حکام شہریوں پر ٹیکس تو لگا رہے ہیں لیکن اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے ادا نہیں کر رہے۔

سیاسی منظر نامے کے بارے میں، نعیم رحمان نے زور دے کر کہا کہ متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) اور پی پی پی شہر کی حالت زار کے لیے یکساں ذمہ دار ہیں۔ انہوں نے ایم کیو ایم پر مینڈیٹ کے ووٹ بیچنے کا الزام لگایا اور دس جماعتوں کی حمایت کے بعد بھی کسی مثبت نتائج کے بارے میں شکوک کا اظہار کیا۔ رحمان نے اس بات پر زور دیا کہ ان کی خدمت صرف انتخابات تک محدود نہیں ہے اور سیلاب جیسے بحرانوں کے دوران عوام کی خدمت کرنے کے اپنے عزم کو اجاگر کیا۔

ایم کیو ایم کے ان الزامات کے جواب میں کہ جے آئی انتخابات کے دوران ان کی حمایت کرتی ہے، رحمان نے واضح کیا کہ وہ کسی کو آر اوز یا ڈی آر اوز کے ذریعے جیتنے پر مجبور نہیں کرتے۔ انہوں نے پارٹی اراکین پر زور دیا کہ وہ عوام کی خدمت پر توجہ دیں، انہیں ووٹ ڈالنے پر مجبور کریں، اور اس بات پر زور دیا کہ جماعت اسلامی اپوزیشن میں بیٹھنے کی مہم نہیں چلا رہی ہے۔ بلکہ ان کا مقصد حکومت میں رہنا اور کراچی میں مثبت تبدیلی لانا ہے۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

سونے کی قیمتوں میں نمایاں کمی: ایک تولہ کی قیمت اب 242,000 روپے ہے

مقامی مارکیٹ میں سونے کی فی تولہ قیمت میں 6200 روپے کی کمی دیکھی گئی۔ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *