علی محمد خان نے ’ایکس‘ کی بندش کیخلاف عدالت جانے کا فیصلہ کیا ہے

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) پارٹی کی اہم شخصیت علی محمد خان نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ‘ایکس’ کی معطلی کو ہائی کورٹ برائے سماجی تعلقات کے ذریعے چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

علی محمد خان کا یہ فیصلہ پاکستان میں اظہار رائے کی آزادی پر بڑھتے ہوئے خدشات کے درمیان آیا ہے۔ ایک بیان میں، انہوں نے حکومت کی طرف سے “من مانی کارروائی” قرار دیے جانے والے اس کا مقابلہ کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ آج سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس کی معطلی کا چوتھا دن ہے۔ آج میں فاشسٹ حکومت کے اس صوابدیدی اقدام کو چیلنج کرنے کے لیے بطور وکیل اسلام آباد ہائی کورٹ جا رہا ہوں کیونکہ یہ ظلم قابل قبول نہیں ہے۔ .

علی محمد خان نے آزادی اظہار کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ یہ ایک بنیادی انسانی حق ہے۔ انہوں نے جدید دور کے مطابق ڈھالنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ “ہم پچھلی صدی کی لڑائیوں میں نہیں جی رہے ہیں۔” انہوں نے انٹرنیٹ یا سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کو بند کرنے کے تصور کے خلاف بحث کرتے ہوئے کہا کہ یہ عصری مسائل کا حل نہیں ہے۔ اس کے بجائے، اس نے عوام کو اقتدار کی واپسی کی وکالت کی، یہ کہتے ہوئے، “عوام کا مینڈیٹ عوام کو واپس کرنا ہو گا۔ عوام کو سچ بولنے دو، سچ سامنے آنے دو۔”
علی محمد خان کا معطلی کو چیلنج کرنے کا فیصلہ پاکستان میں کارکنوں اور سیاست دانوں میں ملک میں آزادی اظہار اور معلومات تک رسائی کے حوالے سے وسیع تر تشویش کی عکاسی کرتا ہے۔ اس کے اقدام سے توقع ہے کہ ڈیجیٹل پلیٹ فارمز پر سنسرشپ اور حکومتی کنٹرول سے متعلق بحثیں دوبارہ شروع ہوں گی۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

طلال چوہدری کی مخصوص نشستوں کے فیصلے پر تنقید، دعویٰ یہ سیاسی استحکام کو نقصان پہنچاتا ہے

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما طلال چوہدری نے مخصوص نشستوں کے حوالے سے حالیہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *