کوئٹہ بلوچستان میں مسلح حملہ آوروں نے پولیس موبائل کو نشانہ بنایا

کوئٹہ، بلوچستان میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا جب مسلح حملہ آوروں نے سبزی روڈ کے علاقے میں پولیس موبائل کو نشانہ بنایا۔ حملہ آوروں نے، جن کی تعداد چار تھی اور دو موٹر سائیکلوں پر سوار تھے، معمول کے گشت کے دوران پولیس کی گاڑی پر فائرنگ شروع کر دی۔ پولیس کی جانب سے فوری اور فیصلہ کن ردعمل کے نتیجے میں چاروں حملہ آوروں کو بے اثر کر دیا گیا، اگرچہ قیمت کے بغیر نہیں۔

بلوچستان کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) کے ترجمان کے مطابق پولیس کی گاڑی کی جزوی بلٹ پروفنگ نے اندر موجود تمام اہلکاروں کی حفاظت کو یقینی بنایا۔ تاہم اس کے بعد ہونے والے فائرنگ کے تبادلے میں ایک حملہ آور موقع پر ہی مارا گیا، جب کہ باقی تین نے کلی زرین کے قریبی گھر میں پناہ لی۔

قانون نافذ کرنے والے حکام نے فوری طور پر علاقے کو گھیرے میں لے لیا، مسلح افراد کے ہتھیار ڈالنے کے لیے بات چیت کا آغاز کیا۔ بدقسمتی سے، صورتحال اس وقت بڑھ گئی جب حملہ آوروں نے سی ٹی ڈی اہلکاروں پر فائرنگ کر دی، جس سے جوابی کارروائی کی گئی۔ اس کے بعد ہونے والے تصادم میں، گھر کے اندر موجود تینوں حملہ آوروں کو گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا۔

کامیاب آپریشن کے نتیجے میں ہلاک ہونے والے حملہ آوروں سے موٹر سائیکل، پستول اور دستی بم سمیت اہم شواہد برآمد ہوئے۔ یہ واقعہ خطے میں امن و سلامتی کو برقرار رکھنے میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کو درپیش جاری چیلنجوں کی نشاندہی کرتا ہے۔

حکام نے پولیس کے تیز اور موثر ردعمل کو سراہا ہے، جس نے شہریوں کو مزید جانی نقصان اور ممکنہ نقصان سے بچا لیا۔ حملے کے پیچھے محرکات اور بڑے شدت پسند نیٹ ورکس سے ممکنہ روابط کا پتہ لگانے کے لیے تحقیقات جاری ہیں۔

یہ واقعہ دہشت گردی سے لاحق مسلسل خطرے اور کمیونٹیز کی حفاظت میں سیکورٹی فورسز کے اہم کردار کی یاد دہانی کا کام کرتا ہے۔ اس آپریشن میں شامل افسران کی بہادری اور لگن سنگین خطرے کے باوجود امن و امان کو برقرار رکھنے کے ان کے عزم کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

چونکہ خطہ جانی نقصان پر سوگ منا رہا ہے، توقع ہے کہ حفاظتی اقدامات کو بڑھانے اور انتہا پسندانہ نظریات کا مقابلہ کرنے کی کوششیں تیز ہو جائیں گی۔ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے اور شہریوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کا عزم غیر متزلزل ہے، کیونکہ حکام کوئٹہ اور اس سے باہر امن و استحکام کو برقرار رکھنے کے لیے انتھک کام جاری رکھے ہوئے ہیں۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

اسلام آباد ہائی کورٹ نے توہین عدالت کیس میں فواد چوہدری کا جیل ٹرائل کالعدم قرار دے دیا

اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق وفاقی وزیر فواد چوہدری کے حق میں فیصلہ سناتے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *