آصف زرداری سے بلوچستان کے 3 آزاد ارکان صوبائی اسمبلی نے ملاقات کی ، پی پی میں شامل

ایک اہم سیاسی پیش رفت میں بلوچستان صوبائی اسمبلی کے تین آزاد ارکان نے سابق صدر آصف علی زرداری سے بلوچستان سے کامیاب ملاقات کے بعد پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) میں شمولیت کا فیصلہ کیا ہے۔ اس اقدام سے خطے میں پیپلز پارٹی کی موجودگی اور اثر و رسوخ کو تقویت ملے گی۔

لیاقت لاشاری، اسفند یار کاکڑ اور مولوی نور اللہ نامی تینوں ارکان نے پی پی پی میں شمولیت کا فیصلہ اس کے وژن اور پالیسیوں کا حوالہ دیتے ہوئے کیا۔ ان کا فیصلہ ایک اہم وقت پر آیا ہے، کیونکہ بلوچستان میں سیاسی حرکیات بدستور تیار ہو رہی ہیں۔

ان تین ارکان کی شمولیت سے بلوچستان اسمبلی میں پیپلز پارٹی کی تعداد 13 ہو گئی ہے جس سے یہ صوبے کی سب سے بڑی پارلیمانی جماعت بن گئی ہے۔ امکان ہے کہ اس پیش رفت سے بلوچستان کے سیاسی منظر نامے پر نمایاں اثرات مرتب ہوں گے، ممکنہ طور پر اتحاد اور اسمبلی کے اندر طاقت کی حرکیات کی تشکیل نو ہو گی۔

بلوچستان میں پی پی پی کی توسیع مستقبل کے سیاسی چیلنجوں سے پہلے ایک حکمت عملی کی نشاندہی کرتی ہے۔ پارٹی کی قیادت نے صوبے کو درپیش مسائل کو حل کرنے اور اس کی ترقی اور خوشحالی کے لیے کام کرنے کی صلاحیت پر اعتماد کا اظہار کیا ہے۔

بلوچستان کا سیاسی منظر نامہ رواں دواں رہا ہے، جس میں مختلف جماعتیں اثر و رسوخ کے لیے کوشاں ہیں۔ صوبائی اسمبلی میں پی پی پی کی مضبوط پوزیشن سے خطے میں سیاسی مساوات پر اثرات مرتب ہونے کی توقع ہے، جو ممکنہ طور پر دوبارہ صف بندی اور نئے اتحاد کی طرف لے جائے گی۔

مجموعی طور پر ان تینوں آزاد اراکین کی پیپلز پارٹی میں شمولیت کا فیصلہ ایک اہم پیش رفت ہے جس کے بلوچستان کے سیاسی منظر نامے پر دور رس اثرات مرتب ہونے کا امکان ہے۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

زلفی بخاری پی ٹی آئی چیئرمین کے مشیر برائے بین الاقوامی امور مقرر

پی ٹی آئی کے سیکریٹری جنرل عمر ایوب کی جانب سے جاری کردہ باضابطہ نوٹیفکیشن …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *