عمران خان نے بلوچستان وزیراعلٰی کے لیے سالار خان کا نام نامزد کر دیا.

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے سربراہ عمران خان نے صوبائی اسمبلی کے انتخابات میں حصہ نہ لینے والے امیدوار کو بلوچستان کا ممکنہ وزیر اعلیٰ نامزد کرکے ایک غیر روایتی اقدام کیا ہے۔ اس فیصلے نے تنازعہ کھڑا کر دیا ہے اور خطے میں پی ٹی آئی کی حکمت عملی پر سوالات اٹھائے ہیں۔

نامزد امیدوار سالار خان حالیہ صوبائی اسمبلی کے انتخابات میں مدمقابل نہیں تھے لیکن انہوں نے قومی اسمبلی کے انتخابات میں حصہ لیا، حالانکہ وہ ناکام رہے۔ ان کی نامزدگی کا اعلان عمران خان اور پی ٹی آئی رہنما بیرسٹر گوہر کے درمیان اڈیالہ جیل میں ملاقات کے بعد کیا گیا۔

بیرسٹر گوہر نے میڈیا کو ایک بیان میں سالار خان کو بلوچستان کی وزارت اعلیٰ کے لیے پارٹی کی جانب سے منتخب کرنے کی تصدیق کی۔ تاہم، سالار خان نے بعد میں واضح کیا کہ وہ اس عہدے کے لیے سرگرمی سے نہیں چاہتے بلکہ یہ فیصلہ مشاورت کے ذریعے کیا جائے گا۔

اس اقدام کو تنقید کا سامنا کرنا پڑا، کیونکہ کچھ لوگ صوبائی سطح پر انتخابی عمل میں حصہ نہ لینے والے امیدوار کی نامزدگی کے جواز پر سوال اٹھاتے ہیں۔ دوسروں کا قیاس ہے کہ یہ فیصلہ پی ٹی آئی کی بلوچستان میں ایک بڑی سیاسی حکمت عملی کا حصہ ہو سکتا ہے۔

سالار خان کی نامزدگی نے پی ٹی آئی کے بلوچستان میں گورننس اور نمائندگی کے بارے میں بحث چھیڑ دی ہے۔ یہ دیکھنا باقی ہے کہ یہ فیصلہ خطے کے سیاسی منظر نامے پر کیا اثر ڈالے گا اور آیا یہ پی ٹی آئی کی بلوچستان میں اپنی پوزیشن مضبوط کرنے کی کوششوں میں مدد یا رکاوٹ بنے گا۔


About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

سونے کی قیمتوں میں نمایاں کمی: ایک تولہ کی قیمت اب 242,000 روپے ہے

مقامی مارکیٹ میں سونے کی فی تولہ قیمت میں 6200 روپے کی کمی دیکھی گئی۔ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *