عمران خان کی دورانِ عدت نکاح کا مقدمہ خارج کرنے کی درخواست مسترد کر دی گئی

اسلام آباد ہائی کورٹ نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے بانی عمران خان اور ان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کے خلاف عدت کے دوران نکاح کا مقدمہ خارج کرنے کی درخواست مسترد کردی۔ چیف جسٹس عامر فاروق نے 16 صفحات پر مشتمل تفصیلی فیصلہ پی ٹی آئی اور بشریٰ بی بی کی جانب سے عدت کے دوران نکاح کیس کو خارج کرنے کی درخواست کے جواب میں جاری کی
عدالت نے اس بات پر زور دیا کہ شادی کے فراڈ کے الزامات سے متعلق سمن جاری کرنے میں قانون کی کوئی خلاف ورزی نہیں پائی گئی۔ فیصلے میں واضح کیا گیا کہ عدالت نے فراڈ کے الزامات کی بنیاد پر کارروائی شروع کرنے میں کوئی قانونی غلطی نہیں دیکھی اور ملزمان مقدمے کی سماعت کے دوران میرٹ پر اپنا کیس پیش کر سکتے ہیں۔
عدالت نے شادی کے فراڈ، کالعدم قرار دینے کے سمن کو کالعدم قرار دینے کی درخواست مسترد کرتے ہوئے کہا کہ مبینہ جرم کے بعد ایسی درخواستوں پر غور نہیں کیا جا سکتا۔ عدالت نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ سپریم کورٹ کے فیصلوں کے مطابق جرم ثابت ہونے کے بعد کیس کو خارج نہیں کیا جا سکتا۔
عمران خان اور بشریٰ بی بی کے خلاف عدت کے دوران نکاح کیس کی سماعت اس وقت ٹرائل کورٹ میں جاری ہے۔ عدالت نے یاد دلایا کہ بشریٰ بی بی کے سابقہ ​​اور موجودہ شوہر قانونی لڑائی میں مصروف ہیں، جو صورتحال کی پیچیدگی کی نشاندہی کرتے ہیں۔
اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے میں کہا گیا ہے کہ عدت کے دوران نکاح کیس سے متعلق سمن جاری رہیں گے، کیس کو خارج کرنے کی درخواست کو مسترد کرتے ہوئے اور اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ عمران کے خلاف شادی کے فراڈ کے الزامات کی میرٹ کی بنیاد پر قانونی کارروائی جاری رکھی جائے۔ خان اور بشریٰ بی بی۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

سونے کی قیمتوں میں نمایاں کمی: ایک تولہ کی قیمت اب 242,000 روپے ہے

مقامی مارکیٹ میں سونے کی فی تولہ قیمت میں 6200 روپے کی کمی دیکھی گئی۔ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *