موٹرویز، ہائی ویز اور انڈس ہائی وے پر ڈکیتی کی وارداتیں سکھر میں کاروباری سرگرمیاں بری طرح متاثر

سندھ کا اہم تجارتی مرکز سکھر شہر موٹر ویز، نیشنل ہائی وے اور انڈس ہائی وے پر ڈکیتی کی وارداتوں سے شدید متاثر ہے۔ تاجروں کا کہنا ہے کہ ڈکیتی کی بڑھتی ہوئی وارداتوں کی وجہ سے چھوٹے شہروں کے تاجروں اور اہل خانہ نے خریداری کے لیے سکھر آنا چھوڑ دیا ہے، کیونکہ ڈکیتی کے خطرے کے پیش نظر لوگ شاہراہوں پر سفر کرنے سے گریز کر رہے ہیں۔

سندھ کے دوسرے سب سے بڑے تجارتی مرکز سکھر نے اپنی ہلچل سے بھرپور بازاروں اور ریٹیل آؤٹ لیٹس میں عید کی خریداری کا آغاز نہیں دیکھا، جس کی بنیادی وجہ مہنگائی اور سیکیورٹی کی بگڑتی ہوئی صورتحال ہے۔ کشمور، گھوٹکی، جیکب آباد اور دیگر شہروں کے اہل خانہ اور تاجر سکھر کے تجارتی مراکز میں اپنی خریداری مکمل کرکے رات گئے تک اپنے آبائی علاقوں کو بحفاظت واپس لوٹتے تھے۔ تاہم ان دنوں ایم فائیو موٹر وے، نیشنل اور انڈس ہائی ویز پر ڈکیتی کی وارداتوں میں اضافے کے بعد سکھر کے تاجر ان خریداروں کے منتظر ہیں جو موجودہ صورتحال میں غیر ضروری طور پر بازاروں میں جانے سے گریز کر رہے ہیں۔

کندھ کوٹ کشمور میں ڈاکوئوں نے سوئی سدران کے دو گارڈز کو اغوا کر لیا۔ ڈی آئی جی عبدالحمید کھوسہ کے مطابق موٹر ویز سمیت تمام شاہراہوں پر رینجرز اور پولیس کا گشت بڑھا دیا گیا ہے اور جرائم پر قابو پانے میں تیزی لائی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکوؤں کے علاقوں میں مکمل سیل ہو چکی ہے، اب ڈاکو جنگل میں نہیں آ سکتے، جنگل میں چھاپہ مار کر ان کے ٹھکانے تباہ کر دیے گئے ہیں، پولیس سے مقابلے میں 24 ڈاکو مارے جا چکے ہیں۔

تاجروں نے مطالبہ کیا ہے کہ لاقانونیت پر قابو پایا جائے تاکہ تاجر اور عوام بلا خوف عید کی خریداری کر سکیں۔ ان کا کہنا ہے کہ جرائم میں اضافے سے نہ صرف کاروبار بلکہ لوگوں کی روزمرہ زندگی بھی متاثر ہوئی ہے کیونکہ وہ لوٹ مار یا اغوا کے خوف کے بغیر معمول کی سرگرمیاں انجام دینے سے قاصر ہیں۔

اس صورتحال نے سیاحت کی صنعت کو بھی متاثر کیا ہے کیونکہ سیاح سیکیورٹی خطرات کے باعث سکھر اور دیگر علاقوں کا سفر کرنے سے کتراتے ہیں۔ مقامی انتظامیہ نے یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ سیکیورٹی کی صورتحال کو بہتر بنانے اور ڈکیتی کی ان وارداتوں میں ملوث مجرموں کو پکڑنے کے لیے اقدامات کر رہے ہیں۔ تاہم، جب تک نمایاں بہتری نہیں دیکھی جاتی، توقع ہے کہ سکھر میں کاروباری سرگرمیاں سست رہیں گی، جس سے خطے کی مجموعی معیشت متاثر ہوگی۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

زلفی بخاری پی ٹی آئی چیئرمین کے مشیر برائے بین الاقوامی امور مقرر

پی ٹی آئی کے سیکریٹری جنرل عمر ایوب کی جانب سے جاری کردہ باضابطہ نوٹیفکیشن …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *