سپریم کورٹ کی طرف سے جے یو آئی کے امیدوار عبدالحفیظ لونی کو الیکشن لڑنے سے روک دیا گیا

سپریم کورٹ آف پاکستان نے جے یو آئی (ف) کے امیدوار عبدالحفیظ لونی کو آئندہ انتخابات میں حصہ لینے سے روکنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ فیصلہ ایک سماعت کے دوران کیا گیا جہاں قانونی مسائل کے باوجود الیکشن لڑنے کی لونی کی درخواست پر چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ غور کر رہا تھا۔

چیف جسٹس نے نشاندہی کی کہ لونی نے حال ہی میں 2 سال اور 2 ماہ قید کی سزا کاٹی۔ مزید برآں، نیب عدالت نے 10 سال قید اور 5 کروڑ روپے جرمانے کی بھاری سزا سنائی۔ چیف جسٹس نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایسی قانونی ذمہ داریاں رکھنے والے افراد کو انتخابات میں بلوچستان کے عوام کی نمائندگی نہیں کرنی چاہیے۔

عدالت کا فیصلہ اس اصول پر مبنی تھا کہ جن کی سزائیں اور قانونی مسائل زیر التوا ہیں وہ عوام کے مفادات کو مؤثر طریقے سے پورا نہیں کر سکتے۔ جسٹس محمد علی مظہر نے اس بات پر زور دیا کہ مالی ذمہ داریوں کو پورا کرنے میں ناکام افراد، جیسے کہ 5 کروڑ روپے جرمانہ ادا نہ کرنا، انتخابی عمل میں حصہ لینے کی اجازت نہیں ہونی چاہیے۔

اس کے بعد چیف جسٹس نے لونی جیسے افراد کو الیکشن نہ لڑنے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ سیاسی کردار پر غور کرنے سے پہلے اپنے قانونی معاملات طے کرلیں۔ جسٹس فائز عیسیٰ نے اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ جو لوگ مالیاتی ذمہ داریاں پوری نہیں کرتے ان کے اثاثے ضبط کر لیے جائیں۔

بعدازاں عدالت نے لونی کی اپیل مسترد کرتے ہوئے انہیں انتخابات میں حصہ لینے سے روکنے کا حکم جاری کیا۔ اس فیصلے کو الیکشن ٹربیونل اور بلوچستان ہائی کورٹ کی جانب سے لونی کی اپیل مسترد کیے جانے کو برقرار رکھنے کے عدالتی اقدام سے تقویت ملی۔ موقف واضح ہے: جمہوری نظام کی سالمیت کو برقرار رکھنے کے لیے اہم قانونی مسائل کے حامل افراد کو انتخابی عمل سے باہر رکھا جانا چاہیے

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

مسلم لیگ ن کی سینٹرل ورکنگ کمیٹی کا اجلاس: شہباز شریف قائم مقام پارٹی صدر مقرر

پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کے اندر ایک اہم پیش رفت میں، …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *