خیبرپختونخوا حکومت نے سیاسی تشدد کے الزامات کے درمیان چوہدری پرویز الٰہی کی حالت کی تحقیقات کا مطالبہ کیا

خیبرپختونخوا حکومت نے سیاسی تشدد کے الزامات کے درمیان چوہدری پرویز الٰہی کی حالت کی تحقیقات کا مطالبہ کیا

ایک حالیہ پیش رفت میں، خیبرپختونخوا (کے پی) کی حکومت نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما چوہدری پرویز الٰہی کی حالت پر تشویش کا اظہار کیا ہے، جو اس وقت اڈیالہ جیل میں قید ہیں۔ حکومت نے ان کے خلاف مبینہ تشدد کی اطلاعات کے بعد ان کی صحت کے بارے میں تشویش کا حوالہ دیتے ہوئے الٰہی کے مکمل طبی معائنے کا مطالبہ کیا ہے۔

وزیر اعلیٰ کے مشیر برائے اطلاعات بیرسٹر محمد علی سیف نے پنجاب حکومت کی جانب سے الٰہی کے کیس کو ہینڈل کرنے پر تنقید کرتے ہوئے ان کے انداز کو تشویشناک قرار دیا۔ سیف نے شفافیت کی ضرورت پر زور دیا اور پنجاب حکومت پر زور دیا کہ کے پی حکومت کی میڈیکل ٹیم کو جامع طبی جانچ کے لیے الٰہی تک رسائی کی اجازت دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ ہم یہ معلوم کرنا چاہتے ہیں کہ پرویز الٰہی گرنے سے زخمی ہوئے یا تشدد کا نشانہ بنے۔

مزید برآں، سیف نے ایک ممتاز سیاسی شخصیت مریم نواز پر الزام لگایا کہ وہ الٰہی سمیت اپنے سیاسی مخالفین کو نشانہ بنانے کے لیے ذاتی انتقام کا استعمال کر رہی ہیں۔ انہوں نے پی ٹی آئی کے رہنماؤں اور کارکنوں کے تحفظ اور تحفظ کے بارے میں خدشات کا اظہار کیا، خاص طور پر پنجاب کی جیلوں میں قید افراد کو سیاسی تشدد کا نشانہ بننے کا خطرہ ہے۔

سیف نے مریم نواز کو خبردار کیا کہ اگر پرویز الٰہی کے خلاف تشدد کے کوئی ثبوت ملے تو ان کے خلاف جسمانی، ذہنی اور جذباتی تشدد سے متعلق بین الاقوامی قوانین کے تحت قانونی کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے یہ بھی اعادہ کیا کہ اگر کے پی میڈیکل ٹیم کو الٰہی تک رسائی سے انکار کیا جاتا ہے تو حکومت انصاف کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے تمام ضروری قانونی اقدامات کرنے کے لیے تیار ہے۔

چوہدری پرویز الٰہی کے طبی معائنے کا مطالبہ پاکستان میں سیاسی تناؤ کے پس منظر میں سامنے آیا ہے، جہاں مختلف جماعتیں ایک دوسرے پر بدتمیزی اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے الزامات لگا رہی ہیں۔ کے پی حکومت کا موقف قانون کی حکمرانی اور انسانی حقوق کے تحفظ کے لیے خاص طور پر سیاسی اختلاف اور مخالفت کے تناظر میں وسیع تر تشویش کی عکاسی کرتا ہے۔

جوں جوں صورت حال سامنے آ رہی ہے، دیکھنا یہ ہے کہ پنجاب حکومت اور مریم نواز ان الزامات اور مطالبات کا کیا جواب دیتی ہیں۔ اس کیس کا نتیجہ آنے والے دنوں میں مختلف جماعتوں اور ان کے رہنماؤں کے درمیان متحرک ہونے سے پاکستان کے سیاسی منظر نامے پر اہم اثرات مرتب ہو سکتا ہے۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

زلفی بخاری پی ٹی آئی چیئرمین کے مشیر برائے بین الاقوامی امور مقرر

پی ٹی آئی کے سیکریٹری جنرل عمر ایوب کی جانب سے جاری کردہ باضابطہ نوٹیفکیشن …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *