بلاول بھٹو کا لاہور جلسے سے خطاب

پاکستان کو پرانے سیاستدانوں کے ہاتھ میں نہیں جانا چاہیے

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے زور دے کر کہا ہے کہ پاکستان کو پرانے سیاستدانوں کے ہاتھ میں نہیں جانا چاہیے۔ اپنے انتخابی گڑھ لاہور میں ایک جلسے میں بلاول نے شریف خاندان پر طنزیہ انداز میں کہا کہ لاہور ان کا نہیں، ان کا ہے۔ وہ لاہور میں اپنی موجودگی پر سوال اٹھانے کی تاریخی ستم ظریفی کی نشاندہی کرتے ہیں جب اس شہر نے پہلے بے نظیر بھٹو کو وزیر اعظم منتخب کیا تھا اور پنجاب میں شریفوں اور وسیم اکرم پلس کے درمیان متبادل اقتدار حاصل کیا تھا۔

تبدیلی کی ضرورت کو اجاگر کرتے ہوئے بلاول نے زور دیا کہ لاہور کی تقدیر کو ہمیشہ کے لیے ایک ہی سیاسی چہروں سے نہیں باندھنا چاہیے۔ وہ نوجوانوں سے پرجوش طریقے سے اپنے ووٹوں کو ضائع نہ کرنے کی اپیل کرتا ہے اور اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرنے کا موقع فراہم کرنے کی اپیل کرتا ہے۔ بلاول نے ان لوگوں کی منافقت پر افسوس کا اظہار کیا جو کبھی ووٹ کے تقدس کے علمبردار تھے لیکن اب اپنے اصولوں کو چھوڑ رہے ہیں۔

اپنی توجہ پی ٹی آئی کے کارکنوں کی طرف مبذول کراتے ہوئے، بلاول نے پارٹی کے بنیادی اصولوں کو ترک کرنے پر ان پر تنقید کی۔ انہوں نے سیاسی مخالفین کے خاندان کی خواتین کو قید کرنے کی مذمت کرتے ہوئے اسے پی ٹی آئی کارکنوں کے خلاف مسلم لیگ ن کی جانب سے انتقامی حربہ کے طور پر پیش کیا۔ بلاول نے مسلم لیگ ن کے ہاتھوں ناانصافی برداشت کرنے والے اپنے خاندان کے ذاتی تجربات بتائے۔

انتقامی سیاست کے خاتمے کا مطالبہ کرتے ہوئے بلاول نے آئندہ انتخابات کو تیروں اور شیروں کے درمیان تصادم قرار دیا۔ وہ اپنی آمدنی کو دوگنا کرنے، 300,000 گھر بنانے، تین سو یونٹس کو مفت بجلی فراہم کرنے اور بھوک سے پاک پاکستانی شہر کے خواب دیکھنے کا عہد کرتا ہے۔ اگر حکومت کرنے کا موقع ملا تو وہ بھوک مٹانے کے لیے یونین کونسل کی سطح پر پروگرام شروع کرنے کا وعدہ کرتے ہیں۔

اپنے وسیع وژن کو وسعت دیتے ہوئے بلاول دوسرے صوبوں کے سیاست دانوں کے لیے لاہور کو سیاسی میدان جنگ بننے کے خلاف دلیل دیتے ہیں۔ وہ نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کرتا ہے کہ وہ ان لوگوں کی حمایت پر نظر ثانی کریں جنہوں نے اپنے اصولوں کو چھوڑ دیا ہے، اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ ان کی پارٹی ووٹ کے وقار کی حقیقی حامی ہے۔ بلاول کا وژن محض سیاسی دشمنی سے بالاتر ہے، جامع معاشی ترقی اور سماجی بہبود پر توجہ مرکوز کرتا ہے۔ اس کی وابستگی نہ صرف اقتدار حاصل کرنے میں ہے بلکہ ایک ایسے مستقبل کی تشکیل میں ہے جہاں عوام کی بھلائی کو سیاسی انتقام پر ترجیح دی جائے۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

سونے کی قیمتوں میں نمایاں کمی: ایک تولہ کی قیمت اب 242,000 روپے ہے

مقامی مارکیٹ میں سونے کی فی تولہ قیمت میں 6200 روپے کی کمی دیکھی گئی۔ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *