پاکستان کا ایران میں کامیاب آپریشن

آئی ایس آئی نے ایران کے صوبہ سیستان میں فورسز کی جانب سے “مرگ بار سرمچار” کے نام سے کامیاب آپریشن کے بارے میں تفصیلات ظاہر کی ہیں۔ اس آپریشن کے دوران ایران کے اندر دہشت گردوں کے ٹھکانوں کے خلاف ڈرونز اور راکٹوں کا استعمال کیا گیا۔

آئی ایس آئی کے مطابق، پاکستان نے مؤثر طریقے سے ایران کے اندر دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا، جن میں دہشت گرد پہلے پاکستان کے اندر شدت پسندانہ سرگرمیوں میں ملوث تھے۔ آپریشن میں ڈرونز، راکٹوں اور دیگر ہتھیاروں کا استعمال کیا گیا، معصوم جانوں کو نقصان سے بچانے کے لیے مکمل احتیاطی تدابیر کو یقینی بنایا گیا۔

آپریشن میں خاص طور پر بی ایل اے (بلوچستان لبریشن آرمی) اور بی ایل ایف (بلوچستان لبریشن فرنٹ) کے مقامات کو نشانہ بنایا گیا، جن میں بجر جیسے افراد سے وابستہ بدنام زمانہ علاقے بھی شامل ہیں، جنہیں چیئر مین، صغت عرف شفق، اصغر عرف بشام، اور وزیر عرف وزی بھی کہا جاتا ہے۔

ایران کے میزائل حملے کے جواب میں پاکستان نے “مارگ بار سرمچار” نامی خفیہ آپریشن کے ذریعے بھرپور جواب دیا۔ آئی ایس آئی اس بات پر زور دیتی ہے کہ مسلح افواج دہشت گردی کے خطرات سے نمٹنے اور شہریوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے ہمہ وقت چوکس رہیں۔ مسلح افواج دہشت گردی کی سرگرمیوں کے خلاف مستقل طور پر تیار ہیں، جس سے پاکستان کی خود مختاری اور علاقائی سلامتی کے عزم کو تقویت ملتی ہے۔

موجودہ صورتحال کے حوالے سے قومی صحت کمیٹی کے اجلاس کا امکان ہے جس میں حفاظتی اقدامات میں اضافہ کرنے کے مطالبے کا جائزہ لیا جائے گا۔ آئی ایس آئی یقین دلاتی ہے کہ پاکستان کی سلامتی کے خلاف کسی بھی جارحیت کا بھرپور جواب دیا جائے گا، عوام کے تعاون سے دشمنوں کے ارادوں کو ناکام بنایا جائے گا۔ کسی بھی دشمنانہ اقدام کے خلاف حفاظت کے لیے ایک غیر متزلزل عزم اور کسی بھی مذموم سکیم کے خلاف تحفظ قائم کرنے کا پختہ عزم ہے۔

آئی ایس آئی کسی بھی برادر ملک کے ساتھ مساوی شرائط پر بات چیت کو آگے بڑھانے کے پختہ عزم کا اظہار کرتی ہے۔ سفارتی حل کے امکانات پر زور دیتے ہوئے، پڑوسی ممالک بات چیت میں مشغول ہو سکتے ہیں اور مسائل کو پرامن اور سمجھداری سے حل کرنے کے لیے افہام و تفہیم حاصل کر سکتے ہیں۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

وزیراعلیٰ پنجاب کا فرانزک ٹریننگ لیب کو یونیورسٹیوں کے ساتھ شراکت کرنے کا حکم

صوبے میں فرانزک سائنس کی تعلیم اور صلاحیتوں کو بڑھانے کے لیے ایک اہم اقدام …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *