انتخابات میں حصہ لینا ہر کسی کا بنیادی حق ہے: سپریم کورٹ

جسٹس منصور علی شاہ کی سربراہی میں سپریم کورٹ نے واضح کیا کہ انتخابات میں حصہ لینا بنیادی حق ہے اور اس حق میں خلل اندازی کے نتائج برآمد ہوتے ہیں۔ یہ بات پی ٹی آئی کے امیدوار عمر اسلام سے متعلق اپیل کیس کے دوران ہوئی، جن کے کاغذات نامزدگی مسترد کر دیے گئے تھے۔

عدالت جاننا چاہتی تھی کہ عمر اسلام کے کاغذات کیوں مسترد ہوئے اور کیا وہ قانون کے حوالے سے مشکل میں ہیں۔ عمر کے وکیل نے وضاحت کی کہ انہیں حفاظتی ضمانت مل گئی، ایک نامزدگی مسترد جبکہ دوسری کو منظور کر لیا گیا۔

عدالت نے اس بات پر زور دیا کہ لوگوں کو انتخابات میں حصہ لینے کا حق حاصل کرنا کتنا ضروری ہے اور اسے چھیننے کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے۔ انہوں نے الیکشن کمیشن سے کہا کہ وہ امیدواروں کی حیثیت کو چیک کرے اور پاکستانی عوام کے سامنے جوابدہ ہو۔

انہوں نے بیلٹ پیپرز کی چھپائی کے بارے میں بھی تشویش کا اظہار کیا، یہ سوچتے ہوئے کہ کیا چھپائی شروع ہونے کے بعد امیدوار اپنے حقوق سے محروم ہو جائیں گے۔ جسٹس منصور علی شاہ نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو سامنے آنے والے قانونی مقدمات کا علم ہونا چاہیے تھا۔

عدالت نے صورتحال کا جائزہ لینے کے بعد عمر اسلام کو انتخابات میں حصہ لینے کے لیے ہری جھنڈی دینے کا فیصلہ کیا۔ انہوں نے ان مسائل پر غور کرنے کے بعد جمہوری عمل کا حصہ بننے کے ان کے حق کو تسلیم کیا جن کی وجہ سے ان کے کاغذات نامزدگی مسترد ہوئے۔

مختصراً، عدالت کے موقف نے واضح کیا کہ ایک منصفانہ اور جوابدہ جمہوری نظام کو یقینی بناتے ہوئے انتخابات میں حصہ لینے کے لیے لوگوں کے حقوق کا تحفظ کرنا کتنا اہم ہے۔ بات چیت میں امیدواروں کی نگرانی اور بیلٹ پیپرز کی چھپائی سمیت انتخابی عمل سے متعلق خدشات کو دور کرنے میں الیکشن کمیشن کے کردار کی بھی نشاندہی کی گئی۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

پاکستان اسٹاک ایکسچینج: 100 انڈیکس میں 578 پوائنٹس کی کمی

پاکستان اسٹاک ایکسچینج (PSX) میں آج نمایاں مندی رہی، 100 انڈیکس میں 578 پوائنٹس کی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *