نو سال قبل قطر کے ساتھ کیے گئے معاہدوں سے متعلق دستاویزات غائب ہونے کی اطلاع

نو سال قبل قطر کے ساتھ کیے گئے معاہدوں سے متعلق دستاویزات غائب ہونے کی اطلاع ہے۔ کوششوں کے باوجود کابینہ ماضی کے معاہدوں سے متعلق دستاویزات کی تصدیق کرنے میں ناکام رہی۔ بتایا جاتا ہے کہ 2015 میں قطر کے امیر کے دورہ پاکستان کے دوران معاہدوں پر دستخط ہوئے تھے، اور قطر کی منظوری کے بعد دستاویزات پاکستان کے حوالے کر دی گئی تھیں۔

معاہدوں کے مطابق دونوں ممالک کو معلومات کا تبادلہ، تحقیق اور مطالعہ کرنا تھا۔ وزیراعظم کی ہدایت کے بعد کابینہ سے پرانے معاہدے کی منظوری لی گئی۔ قومی ورثہ ڈویژن کی سمری کی بنیاد پر کابینہ میں سرکولیشن کے ذریعے منظوری دی گئی۔

غائب ہونے والی دستاویزات نے دونوں ممالک کے درمیان معاہدوں کی نوعیت اور معلومات کے تبادلے کے حوالے سے خدشات کو جنم دیا ہے۔ اس طرح کی اہم دستاویزات کا کھو جانا ریکارڈ کیپنگ میں خرابی کو نمایاں کرتا ہے اور ماضی کے معاہدوں کی شفافیت پر سوالات اٹھاتا ہے۔

گمشدہ دستاویزات کی بازیافت اور معاہدوں کی صداقت کی تصدیق کے لیے کوششیں جاری ہیں۔ وزیر اعظم کے دفتر نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ دستاویزات کا پتہ لگانے اور ان کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے ضروری اقدامات کریں۔

یہ واقعہ ممالک کے درمیان تمام معاہدوں اور معاملات کے درست اور محفوظ ریکارڈ کو برقرار رکھنے کی اہمیت کو بھی واضح کرتا ہے۔ یہ حکومتوں کے لیے دستاویز کے انتظام اور محفوظ شدہ دستاویزات کے لیے مضبوط نظام نافذ کرنے کے لیے ایک یاد دہانی کا کام کرتا ہے تاکہ مستقبل میں ایسے واقعات کو روکا جا سکے۔

لاپتہ دستاویزات دونوں ممالک کے لیے تشویش کا باعث ہیں، کیونکہ یہ معاہدوں کی شرائط اور فریقین کی جانب سے کیے گئے وعدوں کو سمجھنے کے لیے انتہائی اہم ہیں۔ یہ واقعہ دستاویز کے بہتر انتظامی طریقوں کی ضرورت کو اجاگر کرتا ہے اور بین الاقوامی معاہدوں میں شفافیت اور جوابدہی کی اہمیت کو اجاگر کرتا ہے۔

گمشدہ دستاویزات کے جواب میں، وزیر اعظم کے دفتر نے ان کی گمشدگی سے متعلق حالات کا تعین کرنے اور مستقبل میں ایسے واقعات دوبارہ نہ ہونے کو یقینی بنانے کے لیے تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔ حکومت دوسرے ممالک کے ساتھ اپنے معاملات میں شفافیت اور جوابدہی کو برقرار رکھنے کے لیے پرعزم ہے اور اس مسئلے کو فوری طور پر حل کرنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کرے گی۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

شاہ محمود قریشی پر 9 مئی کو آتش زنی کیس میں فرد جرم عائد

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے سینئر رہنما شاہ محمود قریشی پر 9 مئی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *