گھوٹکی اور کشمور میں ڈاکوؤں کے خلاف مشترکہ آپریشن کی تجویز سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس

بڑھتی ہوئی مجرمانہ سرگرمیوں سے نمٹنے کے لیے گھوٹکی اور کشمور میں ڈاکوؤں کے خلاف مشترکہ آپریشن کی تجویز سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ایس ایس پی) گھوٹکی انور کھیتران نے دی ہے۔ صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے، ایس ایس پی کھیتران نے انسپکٹر جنرل سندھ کو ایک خط لکھا، جس میں مداخلت کی فوری ضرورت کو اجاگر کیا گیا۔

خط میں ڈاکوؤں کے پاس موجود خطرناک ہتھیاروں کا خاکہ پیش کیا گیا، جو قانون نافذ کرنے والے افسران کو ڈھٹائی سے دھمکیاں دے رہے ہیں۔ کھیتران کے مطابق، یہ مجرم جدید ہتھیاروں سے لیس ہیں، جس کی وجہ سے ان کا مؤثر طریقے سے مقابلہ کرنے کے لیے پولیس کے اسلحہ خانے میں اسی طرح کی اپ گریڈیشن کی ضرورت ہے۔

خاص طور پر تشویش کی بات یہ ہے کہ ڈاکوؤں اور مقامی تاجروں کے درمیان گٹھ جوڑ ہے، جس میں سابق ڈاکوؤں سے پیسے بٹورتے ہیں۔ مبینہ طور پر ان گروہوں کی مجرمانہ سرگرمیوں نے کندھ کوٹ پل کی تعمیر میں رکاوٹ ڈالی ہے، جو کہ خطے میں ایک اہم بنیادی ڈھانچے کا منصوبہ ہے۔ مزید برآں، اغوا کے واقعات میں اضافہ ہو رہا ہے، جس سے صورتحال کی نزاکت میں اضافہ ہو رہا ہے۔

خط میں کشمور اور گھوٹکی کے درمیان دلدلی علاقے سے درپیش جغرافیائی چیلنج پر بھی زور دیا گیا، جو ڈاکوؤں کے لیے پناہ گاہ کا کام کرتا ہے۔ اس ناہموار منظر نامے نے مجرموں کو ایک مضبوط گڑھ قائم کرنے اور معافی کے ساتھ اپنی مذموم سرگرمیاں کرنے کے قابل بنایا ہے۔ مزید برآں، ایس ایس پی کھیتران نے نوٹ کیا کہ ڈاکو علاقے میں ترقیاتی منصوبوں کی پیش رفت میں رکاوٹ ڈال رہے ہیں، جو امن و امان کے حوالے سے اپنی ڈھٹائی سے نظر انداز کر رہے ہیں۔

ان پیش رفت کی روشنی میں ایس ایس پی کھیتران نے ڈاکوؤں کے خلاف بڑے پیمانے پر مشترکہ آپریشن کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے ملٹری گریڈ کے ہتھیاروں اور آلات کی تعیناتی پر زور دیا تاکہ پولیس کو اچھی طرح سے مسلح جرائم پیشہ افراد کا مقابلہ کرنے کے قابل بنایا جا سکے۔ مجوزہ آپریشن میں جرائم پیشہ عناصر کی بیخ کنی اور خطے میں امن و امان کی بحالی کے لیے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی مربوط کوششوں کی ضرورت ہوگی۔

خط کا اختتام فوری کارروائی کی درخواست کے ساتھ ہوا، جس میں صورتحال کی عجلت کو اجاگر کیا گیا۔ یہ دیکھنا باقی ہے کہ حکام ایس ایس پی کھیتران کی اپیل پر کیا ردعمل دیں گے اور گھوٹکی اور کشمور میں بڑھتے ہوئے سیکیورٹی چیلنجز سے نمٹنے کے لیے کیا اقدامات کیے جائیں گے۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

زلفی بخاری پی ٹی آئی چیئرمین کے مشیر برائے بین الاقوامی امور مقرر

پی ٹی آئی کے سیکریٹری جنرل عمر ایوب کی جانب سے جاری کردہ باضابطہ نوٹیفکیشن …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *