اتحادی جماعتوں نے ایاز صادق کو اسپیکر اور غلام مصطفیٰ شاہ کو ڈپٹی اسپیکر کے لیے نامزد کردیا

پاکستان میں اتحادی جماعتوں نے قومی اسمبلی میں اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے اہم عہدوں کے لیے اپنی نامزدگیوں کا اعلان کر دیا ہے۔ مسلم لیگ (ن) کی جانب سے ایاز صادق کو اسپیکر کے لیے نامزد کیا گیا ہے جب کہ پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے غلام مصطفیٰ شاہ کو ڈپٹی اسپیکر کے لیے نامزد کیا گیا ہے۔

یہ فیصلہ اسلام آباد میں مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس کے دوران کیا گیا جس میں شہباز شریف اور نواز شریف سمیت اہم رہنماؤں نے شرکت کی۔ نواز شریف نے ایاز صادق پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ صادق سپیکر قومی اسمبلی کے طور پر بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کریں گے۔ دوسری جانب شہباز شریف کو وزارت عظمیٰ کے لیے نامزد کر دیا گیا۔

نامزدگیوں کے بعد شہباز شریف نے اتحادی جماعتوں کی قیادت اور نومنتخب اراکین قومی اسمبلی کو مبارکباد دی۔ ایاز صادق اور غلام مصطفیٰ شاہ کی نامزدگی اتحادی جماعتوں کی قومی اسمبلی میں مضبوط اور تعاون پر مبنی قیادت کے قیام کی کوششوں کی عکاسی کرتی ہے۔

ایک الگ پیش رفت میں، پی پی پی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے اقتصادی، انتخابی اور عدالتی اصلاحات کے لیے سفارشات کا ایک سلسلہ تجویز کیا جسے “میثاق جمہوریت” کہا جا رہا ہے۔ ان سفارشات کا مقصد جمہوری اداروں کو مضبوط بنانا اور حکمرانی میں شفافیت کو یقینی بنانا ہے۔

ایاز صادق اور غلام مصطفیٰ شاہ کی نامزدگی کو اتحادی جماعتوں کی جانب سے قومی اسمبلی میں متوازن نمائندگی اور موثر کام کاج کو یقینی بنانے کے لیے ایک حکمت عملی کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ صادق اور شاہ دونوں تجربہ کار سیاست دان ہیں جن کی اپنی اپنی پارٹیوں میں کلیدی کردار ادا کرنے کی تاریخ ہے۔

توقع ہے کہ قومی اسمبلی کے آئندہ اجلاسوں میں مختلف امور پر گرما گرم بحث و مباحثے کی توقع ہے جن میں مجوزہ اصلاحات اور مخلوط حکومت کے مجموعی گورننس ایجنڈے شامل ہیں۔ سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کے عہدوں کے لیے کامیاب امیدوار اسمبلی کے اندر امن و امان برقرار رکھنے اور نتیجہ خیز مکالمے کو آسان بنانے میں اہم کردار ادا کریں گے۔

جب پاکستان اپنے سیاسی منظر نامے کے ایک نازک دور سے گزر رہا ہے، ایاز صادق اور غلام مصطفیٰ شاہ کی نامزدگیوں نے ملک کے استحکام اور ترقی کے لیے سیاسی جماعتوں کے درمیان تعاون اور اتفاق رائے کی اہمیت کو واضح کیا ہے۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

سونے کی قیمتوں میں نمایاں کمی: ایک تولہ کی قیمت اب 242,000 روپے ہے

مقامی مارکیٹ میں سونے کی فی تولہ قیمت میں 6200 روپے کی کمی دیکھی گئی۔ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *