حکومت ٹیکس چوری اور دھوکہ دہی سے نمٹنے کے لیے اقدامات کو نافذ کر دیے

ٹیکس چوری اور دھوکہ دہی کے طریقوں کو روکنے کی کوشش میں، حکومت نے حال ہی میں ملک بھر میں ٹیکس کی تعمیل اور نفاذ کو مضبوط بنانے کے لیے اقدامات کی ایک سیریز کا اعلان کیا ہے۔ یہ فیصلہ وزیر اعظم کی زیر صدارت ایک اعلیٰ سطحی جائزہ اجلاس کے بعد کیا گیا، جہاں موجودہ ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم کی افادیت کے حوالے سے خدشات کا اظہار کیا گیا۔

ملاقات کے دوران وزیراعظم نے ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم کے نامکمل نفاذ پر عدم اطمینان کا اظہار کیا اور تاخیر کی وجوہات پر سوال اٹھایا۔ اس کے جواب میں حکومت نے ایک انکوائری کمیٹی قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے جسے نظام کے مکمل نفاذ میں حائل رکاوٹوں کی نشاندہی کرنے اور ذمہ داروں کے احتساب کا تعین کرنے کا کام سونپا گیا ہے۔

انکوائری کمیٹی جس کو اپنے نتائج پیش کرنے کے لیے 7 دن کی ڈیڈ لائن دی گئی ہے، وہ ٹیکس چوری اور فراڈ میں ملوث افراد کی نشاندہی کرنے کی بھی ذمہ دار ہوگی۔ یہ اقدام ٹیکس چوری کے خلاف کریک ڈاؤن کرنے اور تمام شہری اور کاروبار اپنی ٹیکس ذمہ داریوں کو پورا کرنے کے لیے حکومت کی وسیع تر کوششوں کا حصہ ہے۔

انکوائری کمیٹی کے اہم فوکس ایریاز میں سے ایک موجودہ ٹیکس سسٹم میں موجود خامیوں کی نشاندہی اور ان کو دور کرنا ہو گا جن کا ٹیکس چوروں کے ذریعے استحصال کیا جا رہا ہے۔ اس میں دستی مداخلت کے ذریعے ٹیکس چوری کو روکنے کے لیے کارخانوں میں خودکار ٹیکس کے نظام کے نفاذ کے امکانات کا جائزہ لینا بھی شامل ہے۔

مزید برآں، حکومت نے ٹیکس کے نفاذ کی کوششوں کو بڑھانے کے لیے ٹیکس حکام اور دیگر متعلقہ اداروں کے درمیان زیادہ تعاون کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ اس میں ممکنہ ٹیکس چوروں کی شناخت اور ان کے خلاف بروقت کارروائی کرنے کے لیے معلومات اور انٹیلی جنس کا اشتراک شامل ہے۔

ٹیکس کی تعمیل اور نفاذ کو مضبوط بنانے کا حکومت کا فیصلہ ایک اہم وقت پر آیا ہے جب ملک کووڈ-19 وبائی امراض کی وجہ سے معاشی چیلنجوں کا سامنا ہے۔ ٹیکس چوری اور دھوکہ دہی کے خلاف کریک ڈاؤن کرتے ہوئے، حکومت کا مقصد محصولات کی وصولی کو بہتر بنانا ہے اور اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ تمام شہریوں کے فائدے کے لیے قلیل وسائل کو مؤثر طریقے سے استعمال کیا جائے۔

آخر میں، ٹیکس چوری اور دھوکہ دہی سے نمٹنے کے لیے حکومت کے حالیہ اقدامات درست سمت میں ایک قدم ہیں۔ ٹیکس کی تعمیل اور نفاذ کو مضبوط بنانے کے لیے فعال اقدامات کر کے حکومت یہ واضح پیغام دے رہی ہے کہ ٹیکس چوری برداشت نہیں کی جائے گی اور ذمہ داروں کا احتساب کیا جائے گا۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

اسلام آباد ہائی کورٹ نے توہین عدالت کیس میں فواد چوہدری کا جیل ٹرائل کالعدم قرار دے دیا

اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق وفاقی وزیر فواد چوہدری کے حق میں فیصلہ سناتے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *