پی ٹی آئی کا فتنہ ابھی بھی موجود ہے :رانا ثناء اللّٰہ

پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کے سینئر رہنما رانا ثناء اللہ نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے اندر ایک مبینہ سازش کے بارے میں خدشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کا مقصد ملک میں بدامنی اور سیاسی عدم استحکام کو جاری رکھنا ہے سیاسی بے یقینی. انہوں نے یہ ریمارکس جیو نیوز پر گفتگو کے دوران کہے، اس بات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہ اس طرح کی سازش کی موجودگی سے ظاہر ہوتا ہے کہ سیاسی عدم استحکام برقرار رہنے کا امکان ہے۔

پروگرام کے دوران، جس میں شاہ زیب خانزادہ شامل تھے اور نئی وفاقی کابینہ کی تشکیل پر توجہ مرکوز کی گئی تھی، رانا ثناء اللہ نے بتایا کہ کابینہ کا اعلان صدارتی انتخابات کے بعد 9 یا 10 مارچ کو متوقع ہے۔

نئی کابینہ کے حوالے سے رانا ثناء اللہ نے اشارہ دیا کہ اسحاق ڈار، ایک اہم شخصیت، ممکنہ طور پر وزیر خزانہ یا خارجہ امور کے طور پر اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔ انہوں نے وزیر داخلہ کے طور پر اپنی ممکنہ تقرری کے بارے میں قیاس آرائیوں کا بھی ازالہ کیا، جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ پارٹی کے اندر اس طرح کے چرچے جاری ہیں، ان کا خیال ہے کہ منتخب عہدیداروں کو ان کی ذمہ داریوں کے لیے جوابدہ ہونا چاہیے۔

مزید برآں رانا ثناء اللہ نے حسین نواز اور حسن نواز کی بے گناہی پر زور دیتے ہوئے کہا کہ نواز شریف، مریم نواز اور ریٹائرڈ کیپٹن صفدر کو ان کے مقدمے میں بری کر دیا گیا ہے، ان کے خلاف مزید الزامات کی کوئی بنیاد نہیں ہے۔

یہ بیانات پاکستانی سیاست کے ایک اہم وقت پر سامنے آئے ہیں، جب ملک کو اہم سیاسی چیلنجز کا سامنا ہے اور قیادت کی تبدیلی سے گزر رہا ہے۔ رانا ثناء اللہ کے تبصرے پاکستانی سیاسی منظر نامے کے اندر گہرے سیاسی تناؤ اور اقتدار کی کشمکش کی عکاسی کرتے ہیں، خاص طور پر پی ٹی آئی اور مسلم لیگ ن کے درمیان۔

نئی وفاقی کابینہ کی آئندہ تشکیل کو ایک اہم لمحے کے طور پر دیکھا جا رہا ہے، کیونکہ یہ ملک کی طرز حکمرانی اور پالیسیوں کی سمت متعین کرے گا۔ اہم عہدوں پر اسحاق ڈار جیسی شخصیات کی شمولیت کے پاکستان کی معیشت اور خارجہ تعلقات پر دور رس اثرات مرتب ہو سکتے ہیں۔

مجموعی طور پر، رانا ثناء اللہ کے ریمارکس پاکستانی سیاست کی پیچیدہ اور اکثر متنازعہ نوعیت کی نشاندہی کرتے ہیں، جو ملک کے سیاسی عمل میں شفافیت، احتساب اور استحکام کی ضرورت کو اجاگر کرتے ہیں۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

پاکستان اسٹاک ایکسچینج: 100 انڈیکس میں 578 پوائنٹس کی کمی

پاکستان اسٹاک ایکسچینج (PSX) میں آج نمایاں مندی رہی، 100 انڈیکس میں 578 پوائنٹس کی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *