عمران خان کے بغیر نہ پارلیمان کو نہیں چلنے دیں گے: لطیف کھوسہ

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما لطیف کھوسہ نے ایک جرات مندانہ دعویٰ کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ پاکستان کی پارلیمنٹ کا کام کاج صرف اور صرف وزیراعظم عمران خان کی موجودگی پر منحصر ہے۔ جیو نیوز کے شاہ زیب خانزادہ کو انٹرویو دیتے ہوئے کھوسہ نے اصرار کیا کہ اگر عمران خان کی سربراہی نہیں ہوئی تو پی ٹی آئی نہ تو پارلیمنٹ کو چلنے دے گی اور نہ ہی اسے چلنے دے گی۔

لطیف کھوسہ کے ریمارکس پی ٹی آئی کی حکومت بنانے کی قربت کے تناظر میں سامنے آئے ہیں، جس میں یہ تجویز کیا گیا ہے کہ جو بھی جماعت عددی برتری حاصل کرے گی اسے اقتدار سنبھالنے پر زور دیا جائے گا۔ انہوں نے صدر سے ایک نوکدار سوال کرتے ہوئے کہا کہ کیا پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل-این) کے پاس سادہ اکثریت ہے، جس کا مطلب یہ ہے کہ حکومت بنانے کی ذمہ داری ان پر ہے۔

سیاسی منظر نامے پر روشنی ڈالتے ہوئے، کھوسہ نے نوٹ کیا کہ پارٹیاں انتخابات کے دوسرے دور میں حصہ لینے سے گریزاں نظر آتی ہیں۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کو گزشتہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کی حکومت میں دھچکا لگا تھا، جب کہ مولانا فضل الرحمان کی دھمکیاں مسلم لیگ (ن) پر منڈلا رہی ہیں۔

فیصلہ کن لہجے میں، لطیف کھوسہ نے اس بات پر زور دیا کہ عمران خان کے بغیر نہ صرف پارلیمنٹ کام کرنا چھوڑ دے گی، بلکہ جمہوریت خود بھی خطرے میں پڑ جائے گی، اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ ریاست کا معمول کا کام عمران خان کی موجودگی پر منحصر ہے۔ یہ بیانات پاکستان کے سیاسی ماحول کو نمایاں کرتے ہیں، جہاں طاقت کی حرکیات سیال اور عددی فوائد پر منحصر ہیں، پی ٹی آئی ملک کے سیاسی مستقبل کی تشکیل میں خود کو ایک کلیدی کھلاڑی کے طور پر رکھتی ہے۔

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

وزیراعلیٰ پنجاب کا فرانزک ٹریننگ لیب کو یونیورسٹیوں کے ساتھ شراکت کرنے کا حکم

صوبے میں فرانزک سائنس کی تعلیم اور صلاحیتوں کو بڑھانے کے لیے ایک اہم اقدام …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *