اسد قیصر اور قاسم سوری کی نظرثانی درخواستیں: خارج ڈپٹی اسپیکر رولنگ کیس

عدالت نے قیصر اور سوری کی اپیلوں کو دھچکا دیتے ہوئے ڈپٹی سپیکر کے فیصلے پر کسی بھی نظر ثانی کو فیصلہ کن طور پر مسترد کر دیا۔ اس کے ساتھ ہی، صدر عارف علوی اور عمران خان نے اپنی اپیلیں واپس لینے کا انتخاب کرتے ہوئے ایک قانونی منظر نامے کی تشکیل کی جہاں عدلیہ نے پارلیمانی پیچیدگیوں کو دور کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔
جسٹس منیب اختر کے تحقیقاتی سوالات سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کے اختیارات کے بنیادی حصے میں شامل تھے، جو روایتی بیوروکریٹک افعال سے ہٹ کر ان کے کردار کو چیلنج کرتے تھے۔ عدالت نے ان عہدوں کو بااختیار بنانے والی قانونی بنیادوں پر وضاحت طلب کی، جس میں آئینی دفعات بالخصوص آرٹیکل 69 کی باریک بینی سے تحقیق پر زور دیا گیا۔
بات چیت سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کے اختیارات تک بڑھائی گئی، جس میں ان کے روایتی بیوروکریٹک کرداروں سے بالاتر ہونے کو اجاگر کیا گیا۔ جسٹس جمال مندوخیل کا سات دن کے اندر تحریک عدم اعتماد پر بروقت کارروائی پر اصرار نے پارلیمانی طریقہ کار سے منسوب عجلت پر زور دیا۔
عدالت نے پارلیمانی امور میں مداخلت کی اپنی صلاحیت کو واضح کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ اگرچہ وہ من مانی مداخلت نہیں کر سکتی لیکن پارلیمانی دائروں میں آئینی خلاف ورزیوں کی جانچ پڑتال کی ضرورت ہے۔ اس اہم نقطہ نظر کا مقصد پارلیمانی کارروائی کی خود مختاری اور عدلیہ کی نگرانی کی ذمہ داریوں کے درمیان ایک نازک توازن قائم کرنا تھا۔
آرٹیکل 69، سب سیکشن 2 کے حوالے سے نعیم بخاری کے دلائل، یہ استدلال کرتے ہوئے کہ یہ اسپیکر کو ذاتی اعمال کے لیے جوابدہ نہیں ٹھہراتا ہے، عدالت کو توجہ مرکوز کرنے پر مجبور کیا۔ عدالت نے اس بات پر زور دیا کہ موجودہ اپیل کو سپیکر یا ڈپٹی سپیکر کی انفرادیت پر فرد جرم کے طور پر نہیں دیکھا جانا چاہئے بلکہ وسیع تر پارلیمانی تناظر میں عدالتی فیصلے کے مضمرات کے امتحان کے طور پر دیکھا جانا چاہئے۔
سپریم کورٹ کی جانب سے قیصر اور سوری کی اپیلوں کو حتمی طور پر مسترد کرتے ہوئے ڈپٹی سپیکر رولنگ کیس پر اپنا موقف مضبوط کر دیا۔ اس کے ساتھ ساتھ، صدر عارف علوی اور عمران خان کی جانب سے اپیلوں کی واپسی نے ایک اسٹریٹجک عنصر کا اضافہ کیا، جس سے کیس کے وسیع تر مضمرات پر عدالت کے غور و خوض کی تشکیل ہوئی۔

.

About نشرح عروج

Nashra is a journalist with over 15 years of experience in the Pakistani news industry.

Check Also

آئرلینڈ سے پہلے میچ میں شکست کو ٹیم میں سے کوئی قبول نہیں کر رہا : محسن نقوی

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیئرمین محسن نقوی نے سختی سے کہا ہے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *